شنبه 25 فروردین 1403

14 August 2023

اسرائیلی کابینہ میں بیت المقدس کی مسجدوں میں اذان پر پابندی کا قانون منظور

اسرائیلی کابینہ میں بیت المقدس کی مسجدوں میں اذان پر پابندی کا قانون منظور


اسرائیلی قانون ساز کمیٹی نے بیت المقدس میں اذان پر پابندی عائد کردی ہے۔

بیت المقدس اور اس کے اطراف کی مسجدوں میں اذان پر پابندی کے مسودے کو باقاعدہ طور پر منظور کرلیا گیا ہے۔

فلسطینی میڈیا سنٹر کے مطابق، فلسطینی مسلمانوں کا کہنا ہے کہ اذان پر پابندی در حقیقت اسلام سے انکار کرنا ہے اور اس شہر میں مسلمانوں کا وجود تاریخی ہے لہٰذا یہ پابندی ناقابل قبول ہے۔

صہیونی حکومت سالوں سے قدس اور فلسطینیوں کی زمینوں پر ناجائز قبضے کے بعد چاہتا ہے کہ بیت المقدس اور اس کے اطراف کی مساجد میں اذان پر پابندی لگائے جو کسی صورت بھی قابل قبول نہیں ہے۔

واضح رہے کہ اسرائیلی کابینہ نے اس قانون کو کچھ اصلاحات کے بعد منظور کرلیا ہے۔

اصلاحات میں کہا گیا ہے کہ بیت المقدس میں اذان پر رات 11 بجے سے صبح 7 بجے تک پابندی ہوگی۔