logo logo
  • تاریخ انتشار:‌ 1395/11/15 - 12:00 ق.ظ
  • چاپ
سامراجی طاقتوں کے خلاف امام خمینی ایک تحریک بن کر منظر عام پر آئے: علامہ راجہ ناصر جعفری

سامراجی طاقتوں کے خلاف امام خمینی ایک تحریک بن کر منظر عام پر آئے: علامہ راجہ ناصر جعفری

سامراجی طاقتوں کے خلاف امام خمینی ایک تحریک بن کر منظر عام پر آئے: علامہ راجہ ناصر جعفری

اسلام آباد( )مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے تحفظ پاکستان و بیداری امت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک و قوم کے دفاع کے لیے بیدار رہنا انتہائی ضروری ہے۔اسی بیداری کا درس شاعر مشرق علامہ محمد اقبال نے اپنی شاعری کے ذریعے پوری قوم کو دیا۔سامراجی و طاغوتی طاقتوں کے خلاف امام خمینی ایک تحریک بن کر منظر عام پر آئے اورجابرشہنشاہیت کے خلاف کلمہ حق ادا کرکے حقیقی اسلام کا عملی نمونہ پیش کیا۔اسی فکر کے پیروکار آج نائجیریا سے یمن اورلبنان سے شام تک فرعونی طاقتوں کے خلاف مضبوط آواز بن کر ابھر رہے ہیں۔

انہوں نے کہ اس ملک کے حکمرانوں کو وطن عزیز سے زیادہ اپنے سرمائے کی فکر ہے۔غریب عوام پر ٹیکسوں کے بے تحاشہ بوجھ ڈال کر سٹیل اور شوگر کی ذاتی ملیں مضبوط کی جا رہی ہیں۔جمہوریت کے نام پر ملک میں جمہوری اقدار کا خون کیا جا رہا ہے۔حکمرانوں کا ہدف اقتدار کو اپنی اولاد کی طرف منتقل کر کے اپنی بادشاہت کو قائم رکھنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی حفاظت کی ذمہ داری ریاستی اداروں اور پاک فوج کی ہے۔کسی اور عسکری قوت یا لشکر کو مسلح سرگرمیوں کی اجازت دینا قومی سلامتی کے منافی اور ملک و قوم کے لیے سنگین خطرے کا باعث بن سکتا ہے۔اس ملک کو سب سے بڑا خطرہ تکفیری قوتوں سے ہے جنہوں نے مذہب کے نام پر قتل و غارت کا بازار گرم کر رکھا ہے۔ماضی میں اس فکر کے پیروکار قیام پاکستان کے مخالف تھے اور قائد اعظم محمد علی جناح کو برملا کافر قرار دیتے رہے۔یہود و نصاری کے ان ایجنٹوں سے چھٹکارا حاصل کر کے ارض پاک کو امن کا گہوارہ بنایا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ مادر وطن پاکسستان ہمیں اپنی زندگی سے زیادہ عزیز ہے۔کوئی بھی قوت جو وطن عزیز کے مفاد کے منافی سرگرمیوں میں مصروف ہے ہماری اس سے کھلی دشمنی ہے۔

 

مطالب مشابه