logo logo
  • تاریخ انتشار:‌ 1395/11/10 - 12:00 ق.ظ
  • چاپ
دنیا تیسری جنگ کے دہانے پر ہے،میخائل گورباچوف

دنیا تیسری جنگ کے دہانے پر ہے،میخائل گورباچوف

دنیا تیسری جنگ کے دہانے پر ہے،میخائل گورباچوف

غیرملکی جریدے میں شائع مضمون میں میخائل گورباچوف لکھتے ہیں کہ دنیا مسائل سے گھری ہے، لیکن اِس میں اہم ترین مسئلہ سیاست میں عسکریت اور اسلحے کی نئی دوڑ ہے۔ 

صدر سابق سوویت یونین کا کہنا تھا کہ دنیا کو جنگ کے خوف سے نکالنا اہم ہے ،اُس کے بعد دیگر عالمی مسائل حل کرنا آسان ہوجائے گا۔ 

انہوں نے لکھا ہے کہ حکومتوں کا بجٹ عوام کی ضروریات پوری نہیں کرپارہا لیکن فوجی اخراجات میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے ،خطرناک ہتھیاروں کی خریداری آسان ہوگئی ہے، آج ایک آب دوز کے حملے میں آدھا براعظم تباہ کیا جاسکتا ہے۔ 

گوربا چیف کے مطابق یورپ میں مزید فوج، ٹینک اور جدید ہتھیار آرہے ہیں، نیٹو اور روس کی فوجیں اتنے قریب ہیں جیسے پوائنٹ بلینک سے شوٹ کرنے کا ارادہ ہو، عسکری صلاحیتوں میں اضافے کے خواہش مند تیار بیٹھے ہیں اور یہ صورتحال انتہائی خطرناک ہے۔ 

میخائل گورباچوف نے خبردار کیا کہ عالمی طاقتوں کے تعلقات بد سے بدتر ہورہےہیں،ایٹمی حملےکاخطرہ حقیقی ہے،اس سلسلے میں سیاسی ڈائیلاگ کے ذریعے مشترکہ فیصلے کرنا ہونگے، ایٹمی ہتھیاروں میں کمی ہی نہیں،میزائل ڈیفنس اور اسٹریٹجک صلاحیتوں میں بھی کمی لانا ہوگی۔ 

انہوں نے کہا کہ سلامتی کونسل کی ذمہ داری ہے سربراہ اجلاس بلا کر ایٹمی ہتھیاروں کے استعمال کے خطرے کو روکا جائے۔ اس معاملےپرقراردادکےلیےٹرمپ اورپوٹن کو پہلا قدم اٹھاناچاہیے۔

 

مطالب مشابه