logo logo
  • تاریخ انتشار:‌ 1395/11/10 - 12:00 ق.ظ
  • چاپ
ہنگری کے وزیر خارجہ کا ایران کے ساتھ تعلقات بڑھانے پر زور

ہنگری کے وزیر خارجہ کا ایران کے ساتھ تعلقات بڑھانے پر زور

ہنگری کے وزیر خارجہ کا ایران کے ساتھ تعلقات بڑھانے پر زور

ہنگری کے وزیر خارجہ نے مشرق وسطی میں اسلامی جمہوریہ ایران کی قدیمی ثقافت اور اہم کردار کا حوالہ دیتے ہوئے دونوں ممالک کے درمیان کثیرالجہتی تعلقات کو مزید بڑھانے پر زور دیا.

یہ بات 'پیٹر سیارٹو' نے گزشتہ روز ہنگری كے دارالحكومت بڈاپسٹ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران كے سفیر 'غلام علی رجبی یزدی' كے ساتھ ایك ملاقات كے دوران گفتگو كرتے ہوئے كہی.

اس موقع پر انہوں نے قریب مستقبل بڈاپسٹ میں دونوں ممالك كے درمیان منعقد ہونے والے مشتركہ اقتصادی كمیشن كا ذكر كرتے ہوئے كہا كہ اس اجلاس كے لئے ضروری اقدامات اٹھائے گئے ہیں اور ایرانی وزیر خزانہ 'علی طیب نیا' اور ان كے اعلی سطحی وفد اس اجلاس میں شركت كے لئے جلد ہنگری كا دورہ كریں گے.

ہنگری كے وزیرخارجہ نے شام میں جنگ بندی كے نفاذ كی ضرورت پر زور دیتے ہوئے كہا كہ اسلامی جمہوریہ ایران، روس اور تركی شام میں جنگ بندی كے نفاذ میں اہم كردار ادا كررہے ہیں اور اس كے علاوہ شامی امن مذاكرات سے شام میں طویل المدت فائربندی كےلئے فضا قائم ہوگی.

انہوں نے اس بات پر زور دیا كہ شامی بحران كا سیاسی حل صرف موجودہ حقائق كو تسلیم كرنے اور خود مختاری كے اصولوں كو اپنانے كی صورت میں ممكن ہے.

بنگری وزیر خارجہ نے كہا كہ ہنگری اسلامی جمہوریہ ایران كی كمپنیوں كے ساتھ اقتصادی تعلقات بڑھانے كا خواہاں ہے.

انہوں نے قریب مستقبل میں ایرانی وزیر خارجہ ' محمدجواد ظریف ' كے ہنگری كے دورے كا حوالہ دیتے ہوئے كہا كہ دونوں ممالك كے اعلی حكام كے درمیان سیاسی اور اقتصادی مذاكرات ضروری ہے.

ایرانی سفیر نے كہا كہ ایرانی سفارت خانے كے اہم ترجیح میں سے ایك گذشتہ میں دونوں ممالك كے درمیان دستخط ہونے والے معاہدوں كا نفاذ ہے.

 

مطالب مشابه