ستاد مرکزی اربعین|کمیته فرهنگی، آموزشی

banner-img banner-img-en
logo

 ادبیات و پژوهش


شہادت عمر وؑبن قرظہ

چاپ
شہادت عمر وؑبن قرظہ

جناب مسلم بن عوسجہ کے بعد عمرو بن قرظہ انصاری خیمہ سے نکلے امام سے اذن جنگ طلب کیا ، امام نے اجازت دی اور آپ مشتاق روز جزا کی طرح جنگ کیا اور سلطان زمین و زمن کی خدمت میں پھرپور کوشش کی اور ابن زیاد کے بہت سارے سپاہیوں کو قتل کیا اور جو بھی تیر امام کی طرف آتا تھا آپ اسے اپنے اوپر لیتے تھے اور جو بھی تلوار کا وار امام کی جانب بڑھتا اسے اپنے جسم پر لے لیتے یہاں تک کہ زخموں کی تاب نہ لا سکے اور امام کی جانب رخ کرکے عرض کیا : اے فرزند رسول کیا میں نے حق وفا ادا کردیا ؟

امام نے فرمایا: ہاں اور تم ہم سے پہلے جنت میں جارہے ہو ، میرا سلام رسول خدا کو پہونچا دینا اور کہنا میں بھی بہت جلد آرہا ہوں ۔

اس کے بعد عمرو نے اتنی جنگ کی کہ درجہ شہادت پر فائز ہوگئے ۔



منابع: لھوف
ارسال کننده: مدیر پورتال
 عضویت در کانال آموزش و فرهنگ اربعین

چاپ

برچسب ها شہادت ۔عمر وؑبن قرظہ۔ کربلا۔ امام حسین

نظرات


ارسال نظر


Arbaeentitr

 فعالیت ها و برنامه ها

 احادیث

 ادعیه و زیارات