ستاد مرکزی اربعین|کمیته فرهنگی، آموزشی

banner-img banner-img-en
logo

 کلام بزرگان


دوسرے شعراء کے افکار

چاپ

ان غیر مسلم مشاہیر اور شعرا کے افکار وتخلیقات سے یہ حقیقت روز ِروشن کی طرح عیاں ہوتی ہے کہ حسینؓ ابن علی کا تعلق کسی خاص قوم یا کسی خاص فرقے سے نہیں بلکہ آپ کا تعلق دنیائے انسانیت سے ہے۔ اسی لیے شاعر انقلاب جوش ملیح آبادی فرماتے ہیں:

کیا صرف مسلمان کے پیارے ہیں حسینؓ

چرخ نوع بشر کے تارے ہیں حسینؓ

انسان کو بیدار تو ہو لینے دو

ہر قوم پکارے گی ہمارے ہیں حسینؓ

جب دنیا کی ہر قوم حسینؓ کی دعویدار بن جائے تو پھر اختلاف کس بات کا۔ لہٰذا علم و دانش اور عقل و آگہی کے اس روشن دور میں تمام عالم انسانیت کو چاہیے کہ وہ نہ صرف ’’ہمارے ہیں حسینؓ‘‘ کے دعوے تک محدود نہ رہے بلکہ فلسفۂ حسین کو سمجھنے اور اس پر عمل کرنے کی کوشش کرے۔ اس وقت مسلمانانِ عالم جن مصائب و آلام سے دوچار ہیں اس کی وجہ یہی ہے کہ ہم بظاہر تو حسینی ہونے کا نعرہ لاتے ہیں لیکن حقیقت میں ہم حسینیت کی روح اور مفاہیم سے نابلد ہیں اور مسلمانوں کو حسینیت کے اصول و قواعد پر غور کرکے ان پر عمل کرنے او رایک پلیٹ فارم پر جمع ہونے کی جتنی ضرورت اب ہے کبھی نہ تھی۔


منابع:   (بشکریہ: سہ ماہی ’’پیغام آشنا‘‘شمارہ: اکتوبر تا دسمبر ۲۰۰۶ء) (مضمون نگار اسسٹنٹ ریجنل ڈائریکٹر علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی سکردو۔ بلتستان)
 عضویت در کانال آموزش و فرهنگ اربعین

چاپ

Arbaeentitr

 فعالیت ها و برنامه ها

 احادیث

 ادعیه و زیارات